KakaGujjar

 


اطلاعِ عام
بانی گجر سنگت پاکستان چوہدری عبدالغفار کاکا گجر کی نمازِ جنازہ صبح نو بجے ٹاؤن شِپ لاہور میں ادا کی جائے گی دوست احباب سے شرکت کی اپیل ہےمکان نمبر 64بلاک نمبر 15نزد اسلم چوک کالج روڈ لاہور
دعاگو ضیاء گجر

1-4-2019 ا نتہائی افسوسناک خبر ,,,
گُجر سنگت پاکستان کے بانی و معروف سماجی شخصیت عبدالغفار کاکا گُجر انتقال کرگئے ,,
انا للہ وانا الیہ راجعون,,
گزشتہ کئی روز سے لاہور کی مقامی ہسپتال میں داخل تھے،
گُجر سنگت پاکستان سمیت پوری قوم ایک عظیم انسان سے محروم

پوری قوم عبدالغفار کاکا گجر کی قربانیوں کو ہمیشہ یاد رکھئے گئی اللہ تعالی کاکا گجر کو اپنی جوار رحمت میں جگہ عطاء فرمائے,,آمین,, اور لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے,,آمین  گجر قوم غم کی اس گھڑی میں ان کے لواحقین کے ساتھ برابر کی شریک ہے

موت اسکی ھےکرےجس کا زمانہ افسوس۔۔۔۔یوں تو دنیا میں سبھی أتے ھیں جانے کے لۓ۔(تحریر نثاراحمد گجر لامبڑ ترجمان انجمن گوجراں بلوچستان) ملک بھر میں گجر قوم کی پہچان “عبدالغفار کاکا گجر” بانی گجر سنگت پاکستان ھر کسی سے محبت کرنے والاانسان ھم سے روٹھ گیا قرأن پاک میں اللہ پاک کا ارشاد ھے کہ موت کا ذاٸقہ ہر ذی روح نے چکھنا ھے لیکن بعض شخصیات ایسی ھوتی ھیں جو پیدا ضرور ھوتی لیکن مرتی نہیں بابا بلھے شاہ نے فرمایا “بلھے شاہ اساں مرنا ناہیں۔۔۔۔گور پیا کوٸی ہور۔۔۔ حالانکہ دنیا کے اصول کے مطابق انکی روح جسم سے پرواز کر جاتی ھے انکی میت منوں مٹی تلے سپرد خاک کر دی جاتی ھے مگر وہ شخصیات مر کر بھی امر ھو جاتے ھیں ایسی ھی ایک عظیم ہستی کا تعلق گجر قبیلے سے ھے جسے ھم محترم چودھری عبدالغفار کاکا کے نام سے یاد کرتے ھیں انکو مرحوم لکھتے ھوۓ کلیجہ منہ کو أتاھے ھماری گجر قوم کی روایت میں سب سے پیارے بیٹے کو پیار سے کاکا کہتے ھیں ماں کے اس لفظ کو مرحوم بے ساری عمر اپنے نام کا حصہ بنالیا ماں کے عطا کۓ اس لفظ کو ہٹانا گوارہ نہ کیا مرحوم میں عاجزی انکساری کوٹ کوٹ کر بھری ھوٸی تھی شفقت کا سمندر تھے ان کا ظاھر باطن ایک تھا سچے کھرے انسان تھے غریبوں اور محتاجوں کی امداد کر کے خوشی محسوس کرتے تھے یاروں کے یار تھے اپنے بزرگوں کی روایت کی پاسداری کی فریضہ سر انجام دیتے ہوۓ اپنی ساکھ و بہار کو أخر وقت تک قاٸم رکھاوہ صاف گو اتنے کہ منہ پر بات کر دیتے زندہ دل اور خدا ترس انسان تھے انہوں نے عملی زندگی میں محنت کو کبھی عار نہیں سمجھا انھوں نے ہمت اور برد باری کے ساتھ ہر شعبہ زندگی میں اپنے أپ کو منوایا گفتگو میں انہیں کمال حاصل تھا سادہ سٹاٸل کے مالک تھے جان محفل تھے انہوں نے اپنی عملی زندگی کا أغاز کراچی سے کیا انجمن نوجوانان گجراں۔انجمن گجراں کراچی کے پلیٹ فارم سے بھی کام کیا محسن قوم چودھری الہی بخش مرحوم جیسی ھستی کے فیض سے بھی سیراب ھوۓ کراچی میں سیاسی پلیٹ فارم جمعیت علماۓ پاکستان نورانی گروپ کے بھی فعال رکن رھے ملیر میں ایک سیاسی جلسہ میں جھگڑے کے دوران شدید زخمی بھی ھوۓ اس کے بعد نیشنل بینک میں ملازمت اختیار کر لی کراچی کے حالات کی وجہ سے لاھور تبادلہ کرا لیا یہاں أکر بھی اپنی فلاحی سماجی سر گرمیاں جاری رکھی گجر سنگت پاکستان کی بنیاد رکھی جسے چند دنوں میں انٹرنینل سطح پر پزیراٸی حاصل ھو گٸ گجر قوم کی ھر خوشی۔غمی۔سماجی۔فلاحی۔اور دیگر سرگرمیوں کی خبریں سب سےپہلے پہچانے کا اعزاز حاصل کر لیا جتنی جلدی اس تنظیم نے گجر قوم کے دلوں میں جگہ بناٸ دوسری کوٸی تنظیم ایسی مثال پیش نہیں کر سکتی پھر اسی پلیت فارم سے مخلص دوستوں کی ٹیم کے ساتھ ملکر گجر لنک رسالہ کا بھی اجرا کیا وہ بھی اپنی مثال أپ ھے امید ھے یہ عظیم ٹیم ان کے بعد بھی اس مشن کو جاری رکھے گے عبدالغفار کاکا مرحوم کے والد محترم کا نام محمد اسماعیل گجر ھے مرحوم چک نمبر 18 نذد بھوۓ أصل تحصیل پتوکی ضلع قصور میں پیدا ھوا سوگوار میں بیوہ۔دو بیٹے۔اور تین بیٹیاں چھوڑی بڑا بیٹا محمد سہیل گجر انکا جانشین ھے مرحوم چند دن ڈینگی بخار میں مبتلہ ھوۓ موذی بیماری کا مقابلہ کرتے ھوۓگجر قوم کا یہ سورج یکم اپریل 2019 شام مغرب کے وقت ھمیشہ کے لۓ غروب ھو گیا انکی موت کی خبر ملک بھر میں انکے چاھنے والو پر بجلی بن کر گری انہیں لاھور ٹاٶن شپ قبرستان میں ہزارں لوگوں کی أھو اور سسکیوں میں سپرد خاک کر دیا۔اللہ تعالی مرحوم کے درجات بلند فرماۓ اور جنت الفردوس میں اعلی مقام دےاور اس کے لواحقین کو صبر جمیل دےاور اس کے پسماندگان پر ھمیشہ اپنا فضل وکرم قاٸم رکھے آمین۔ ملک بھر سے گجر قوم کے اکابرین کی مرحوم کی دفات پر تاثرات۔1۔الحاج غلام رسول گجر بلوچ چیر مین انجمن گوجراں بلوچستان نے فرمایا۔مرحوم ایک بلند کردار نیک سیرت انسان تھے انکی وفات ایک قومی سانحہ ھے.2۔الطاف حسین گجر۔انکی خدمات ھمیشہ یاد رکھی جاہینگی3۔حاجی محمد اسماعیل گجر سابق منسٹر نے کہا۔انکی وفات سے ناقابل تلافی نقصان ھوا۔4۔باباۓ قوم چودھری گلزار محمد نے کہا۔گجر قبیلہ انتہاٸی مخلص دینتدار ھمدرد شخصیت سے محروم ھو گیا 5۔چودھری سلیم الہی نے فرمایا مرحوم کی شخصیت ھمارے لۓ قابل احترام ھے دعا ھے اللہ پاک انکے درجات بلند فرماۓ۔6۔چودھری ناصر محمود گجر صدر انجمن گجراں پنجاب۔انکی شخصیت میرے چند لفظوں کی محتاج نہیں ان جیسے مخلص لوگ صدیوں بعد پیدا ھوتے ھیں۔7 ۔چودھری منظور گجر سیکرٹری پنجاب نے فرمایا انکی وفات سے ھم ایک ھمدرد بھاٸی سے محروم ھو گۓ 8۔چودھری شمیم احمد چاڑ نے کہا انہوں نے ملک بھر میں قوم کا نام روشن کیا انکو جتنا بھی خراج تحسین پیش کیا جاۓ کم ھے9۔ حاجی محمد سرور گجر اوستہ محمد بلوچستان نےکہا انہوں نے ساری عمر قبیلہ کے لۓ کام کیا ۔10۔ چودھری علیم الہی صدر صوبہ سندہ نے فرمایا چودھری صاحب کی وفات سے ھم ایک مخلص رہنما اور کھرے لیڈر سے محروم ھو گۓ 11۔محمد یعقوب گجر سنیر ناٸب صدر انجمن گوجراں بلوچستان نے کہا انکی وفات بہت بڑا حادثہ ھے انکی خدمات ھمیشہ یاد رکھی جاۓ گی۔انہیں کے متعلق ڈاکٹر اقبال نے فرمایا ۔۔۔ہزاروں سال نرگس اپنی بے نوری پر روتی ھے۔۔۔۔بڑی مشکل سےہوتاھے چمن میں دیدہ ور پیدا 12۔عمر شاکر گجر کراچی نے فرمایا۔میں انکی پیار اور محبت کو کبھی نہیں بھلا سکتا 13۔چودھری گلزار احمد گجر انفارمیشن سیکرٹری کراچی نے کہا مرحوم کی وفات کا مجھے ہی نہیں بلکہ پوری قوم کو دکھ ھوا ھے انکی خدمات پر جتنا بھی لکھا جاۓ کم ھے 14۔چودھری نصیر احمد گجر سابق ڈپٹی ڈاٸریکٹر CAA نے کہا مرحوم کی خدمت پر اپنے اور پراۓ سب تعزیت کر رھے ھیں گجر قوم ایک محسن سے محروم ھو گٸ15۔محمد اعظم گورسی نے فرمایا مرحوم کی گجر قوم کے لۓ خدمات قابل فخر ھیں بے شک گجر قوم کے لۓ بڑا سانحہ ھے 16۔محمد اشرف چوھان گجر رابطہ۔مرحوم پورے ملک میں مشہور تھے گجر رابطہ کی پوری ٹیم انکے لواحقین کے غم میں برابر کے شریک ھیں۔17۔چودھری جاوید کمال گجر صدر پنجاب گجر اتحاد نے فرمایا مرحوم بہت خوبیاں کے مالک تھے قوم کے لۓ انکی خدمات ھمیشہ یاد رکھی جاۓ گی انکی یادیں ھمارے ساتھ رھینگی 18۔چودھری حماد احمد گجر لاھور نے کہا ملک بھر کی قوم میں یکساں مقبول تھے ایسے لوگ قوم کا اثاثہ ھوتے ھیں۔

Assalamoalykum Bani E Gujjar Sangat Pakistan Ch Abdul Gaffar Kaka Gujjar ki gaibana namaz e janaza Kl Biroz mangal 2 April 2019 ko bd namaz magrib jama masjid Babul Islam manzoor colony gujjar choc karachi mi Ada Kia ja ay ga Senear naib sadar ch yamin Gujjar halka no 2 Anjuman-e-Gujjran karachi.